سندھ ہائیکورٹ کے فیصلے پر پروین رحمٰن کے اہلخانہ کا ردعمل

سندھ ہائی کورٹ کی جانب سے پروین رحمٰن قتل کیس میں نامزد ملزمان کی سزاؤں کو کالعدم قرار دینے پر مقتولہ کے اہلخانہ نے ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ سندھ ہائی کورٹ کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ میں اپیل دائر کریں گے۔

پروین رحمٰن کے اہلخانہ کا کہنا ہے کہ ملزم کی جانب سے ہمارے اہلخانہ کو خطرہ ہے، اورنگی پائلٹ پروجیکٹ میں کام کرنے والوں کی بھی جان کو خطرہ ہے، ملزمان کو فوری طور پر ایم پی او کے تحت بند کیا جائے۔

مقتولہ کے اہلخانہ کا کہنا ہے کہ سندھ حکومت فوری طور پر سندھ ہائی کورٹ کے فیصلے کے خلاف اپیل کرے، وفاقی حکومت اس طرح کے کیسز کو دیکھے۔

اہلخانہ کا یہ بھی کہنا ہے کہ اس طرح کے کیسز میں اہلخانہ کو انصاف نہیں ملتا، رحیم سواتی اور دیگر کے خلاف ٹھوس شواہد موجود ہیں۔

واضح رہے کہ سندھ ہائی کورٹ نے پروین رحمٰن قتل کیس میں سنائی گئی سزاؤں کو کالعدم قرار دیتے ہوئے کیس میں ملزمان کی سزاؤں کے خلاف اپیلیں منظور کر لی ہیں۔

سندھ ہائی کورٹ نے کہا کہ پروین رحمٰن قتل کیس کے ملزمان دوسرے کیسز میں مطلوب نہیں تو رہا کر دیا جائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں